ہندوستانی حکومت نے کھیلوں کے میدان میں بھی پاکستان کی مخالفت کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے اور اسکواش، ہاکی اور کرکٹ کے بعد پاکستانی کھلاڑیوں پر کبڈی کے دروزے بھی بند کر دیے گئے ہیں۔

کبڈی میں پاکستانی کھلاڑیوں نے دنیا بھر میں اپنا لوہا منوایا ہے اور یہی وجہ تھی کہ ہندوستان میں ہونے والے وائیوو پرو کبڈی لیگ میں پاکستانی کھلاڑیوں کی شرکت کا قوی امکان تھا لیکن ہندوستان نے اس میدان میں پاکستانی کھلاڑیوں پر پابندی لگا دی ہے۔

کبڈی لیگ میں پاکستان سمیت 16 ملکوں کے کھلاڑیوں کے نام شامل تھے اور اس سلسلے میں کھلاڑیوں کیلئے بولی کے عمل کا آغاز 25 جون سے ہونا ہے لیکن پاکستانی کھلاڑیوں کا نام بولی کے آغاز سے ایک ماہ قبل ہی نکال دیا گیا اور انہیں صرف ریزرو کھلاڑی کی حیثیت سے رکھا جا سکتا ہے۔

ہندوستان کے وزیر کھیل وجے گوئل نے کہا کہ اگر پاکستانی کھلاڑیوں منتخب کر لیا جائے تو بھی منتظمین انہیں نہیں کھلا سکتے اور اس بات کا فیصلہ ہندوستانی حکومت کرے گی کہ انہیں کھیلنے کی اجازت دی جائے یا نہیں۔

انہوں نے کہا کہ جب تک پاکستان دہشت گردی سے جان نہیں چھڑاتا، ان سے کھیلنا ناممکن ہے۔

یاد رہے کہ 2014 میں ایونٹ کے افتتاحی ایڈیشن میں چھ پاکستانی کھلاڑیوں نے شرکت کی تھی لیکن 2015 میں یہ تعداد کم ہو کر چار رہ گئی تھی اور شیو سینا کے احتجاج کے سبب پاکستانی کھلاڑی اس کے بعد لیگ کا کوئی میچ نہیں کھیل سکے تھے۔

SHARE

LEAVE A REPLY