برطانوی وزیر اعظم تھریسامے کی ملکہ برطانیہ سے ملاقات

0
227

برطانیہ میں گزشتہ روز ہونے والے انتخابات کے بعد برطانوی وزیر اعظم تھریسامے نے ملکہ برطانیہ سے ملاقات کی ہے۔
ملاقات کے بعد برطانوی وزیر اعظم تھریسامے کا کہنا ہے کہ ہم حکومت بنائیں گے،پولیس اور اداروں کو مزید اختیارات دیں گے، شدت پسندی اور اس کے حامیوں کو شکست دیں گے۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ یونینسٹ پارٹی کے ساتھ مل کر برطانیہ کے مفاد میں فیصلے کریں گے، بریگزٹ پر عمل کریں گے۔
واضح رہے کہ برطانیہ کے عام انتخابات میں تھریسامے کی کنزرویٹوپارٹی نے 318 نشستیں حاصل کی ہیں، لیبر پارٹی 261نشستوں پر کامیاب ہوئی جبکہ حکومت بنانے کے لیے کسی بھی پارٹی کو 326 ووٹ درکار ہیں۔

شمالی آئرلینڈ کی ڈیمو کریٹک یونینسٹ پارٹی نے تھریسا مے کی حمایت کرتے ہوئے ان کے ساتھ اتحاد بنانے پر آمادگی ظاہر کردی۔
ڈیمو کریٹک یونینسٹ پارٹی کے مطابق کنزرویٹیو پارٹی اگر سادہ اکثریت حاصل نہ کرسکی تو ہم مذاکرات کی مضبوط پوزیشن میں ہوں گے۔
ڈی یو پی کا کہنا تھا کہ معلق پارلیمان کی صورت میں ہماری جماعت کی بہت اہمیت ہوگی، ہم سب سے بڑی پارٹی کے ساتھ مخلوط حکومت بنانے کے لیے مذاکرات کریں گے۔
ڈی یو پی کے مطابق کنزرویٹیو پارٹی اور ہماری جماعت میں بہت مشترک ہے، ہم دونوں بریگزٹ کی کامیابی چاہتے ہیں۔
دوسری جانب برطانیہ کی قوم پرست سیاسی جماعت سین فین نے پارلیمان میں نہ بیٹھنے کا اعلان کیا ہے۔ پارٹی کے صدر جیری ایڈمز کا کہنا ہے کہ برطانوی پارلیمان میں اپنی نشستیں نہیں لیں گے۔
ذرائع کے مطابق سین فین کی پالیسی کی وجہ سے پارلیمان میں سادہ اکثریتی نشستوں کی تعداد کم ہو سکتی ہے

SHARE

LEAVE A REPLY