جے آئی ٹی رپورٹ میں تہلکہ خیز انکشاف کیا ہے کہ وزیر اعظم نواز شریف 2010 اور 2013 کے درمیان چوہدری شوگر ملز سے بھی تنخواہ لیتے رہے۔

سپریم کورٹ کےحکم پاناما کیس کے لیے بنائی گئی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ نواز شریف نے چوہدھری شوگرملز سے ماہانہ 5 لاکھ 60 روپے تنخواہ لی۔مجموعی طور پر نواز شریف نے 2 کروڑ 43 لاکھ سے زائد تنخواہ لی۔

جے آئی ٹی کی رپورٹ میں یہ بات بھی سامنے آئی تھی وزیراعظم نوازشریف دبئی میں آف شور کمپنی میں آٹھ سال ملازم رہے۔وزیراعظم کے پاس دوہزار چھ سےدو ہزار چودہ تک دبئی کا اقامہ موجود تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY