افغانستان میں استحکام کے حصول کے لیے حکمتِ عملی تشکیل دینے کے حوالے سے ابھی ٹرمپ انتظامیہ کو کام مکمل کرنا ہے۔ پینٹاگان کے ایک اہل کار نے ’وائس آف امریکہ‘ کو بتایا ہے کہ حکمتِ عملی کو آخری شکل دینے اور اعلان میں ابھی چند ’’ہفتے‘‘ لگ سکتے ہیں۔

جب صدر ڈونالڈ ٹرمپ سے ایک اخباری نمائندے نے پوچھا آیا وہ اس جنگ کے شکار ملک میں اضافی امریکی فوج تعینات کریں گے، جس پر صدر نے کہا کہ ’’ہم دیکھیں گے‘‘۔

ایسے میں جب ٹرمپ پینٹاگان کا دورہ کر رہے ہیں، اِسی موقعے پر نائب صدر، مائیک پینس نے وزیر دفاع جِم میٹس؛ وزیر خارجہ ریکس ٹِلرسن، جوائنٹ چیفز آف اسٹاف جنرل جو ڈَنفرڈ اور دیگر کلیدی اہل کاروں سے ملاقات کی۔

پینٹاگان میں ہونے والی ملاقات کے دوران ’وائس آف امریکہ‘ کو بتایا گیا کہ دورے میں صدر کو ’’عالمی سلامتی کے امور‘‘ پر تفصیلی بریفنگ دی جائے گی۔

سرکاری طور پر اجلاس کا ایجنڈا جاری نہیں کیا گیا۔

SHARE

LEAVE A REPLY