ویسٹ انڈیز نے شے ہوپ اور جیسن ہولڈر کی عمدہ کارکردگی کی بدولت انگلینڈ کے خلاف دوسرے ٹیسٹ میچ میں پوزیشن مستحکم کر لی ہے۔

ہیڈنگلے میں کھیلے جا رہے سیریز کے دوسرے ٹیسٹ میچ کے تیسرے دن ویسٹ انڈیز نے 329 رنز پانچ کھلاڑی آؤٹ سے اپنی پہلی نامکمل اننگز دوبارہ شروع کی تو دن کی پہلی ہی گیند پر جیمز اینڈرسن نے ہوپ کی اننگز کا خاتمہ کردیا جو 147 رنز بنانے کے بعد پویلین لوٹے۔

مایہ ناز انگلش فاسٹ باؤلر نے اگلی ہی گیند پر شین ڈاؤرچ کو وکٹوں کے عقب میں کیچ کرا کر اپنی ٹیم کو ساتویں کامیابی دلائی۔

کپتان جیسن ہولڈر اور جیمز بلیک وڈ نے آٹھویں وکٹ کیلئے 75 رنز کی شراکت قائم کر کے اپنی ٹیم کو 400 رنز مکمل کرائے، دونوں کھلاڑی بالترتیب 43 اور 46 رنز بنانے کے بعد پویلین لوٹے۔

ویسٹ انڈیز کی پوری ٹیم 427 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئی اور یوں مہمان ٹیم نے پہلی اننگز میں 169 رنز کی نمایاں برتری حاصل کی۔ انگلینڈ کی جانب سے جیمز اینڈرسن نے شاندار باؤلنگ کرتے ہوئے پانچ کھلاڑیوں کو میدان بدر کیا۔

انگلش اوپنرز نے دوسری اننگز میں اپنی ٹیم کو 58 رنز کا بہتر آغاز فراہم کیا لیکن اسی اسکور پو ایلسٹر کک کی اننگز اختتام پذیر ہوئی۔

جیسن ہولڈر نے شاندار باؤلنگ کرتے ہوئے آٹھ رنز بنانے والے ٹام ویسٹلے کو بھی رخصت کر کے اپنی ٹیم کو دوسری کامیابی دلائی لیکن انگلینڈ کو بڑا دھچکا اس وقت لگا جب 94 کے مجموعی اسکور پر شینن گیبریئل نے دوسرے اوپنر مارک اسٹون مین کی وکٹیں بکھیر دیں۔

94 رنز پر تین وکٹیں گرنے کے بعد انگلش کپتان جو روٹ اور ڈیوڈ ملان نے ذمے دارانہ بیٹنگ کرتے ہوئے دن کے اختتام تک مزید کوئی وکٹ نہ گرنے دی اور جب تیسرے دن کا کھیل ختم ہوا انگلینڈ نے تین وکٹ کے نقصان پر 171 رنز بنائے تھے، روٹ 45 اور ملان 21 رنز پر کھیل رہے۔

پہلی اننگز میں خسارے کے سبب انگلینڈ کو ویسٹ انڈیز پر مجموعی طور پر صرف دو رنز کی برتری حاصل ہے جبکہ اس کی سات وکٹیں ابھی باقی ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY