میانمار میں خونریزی سے بچ کر بنگلہ دیش میں پناہ لینے والے لاکھوں روہنگیا مہاجرین میں سے تین لاکھ سے زائد ابھی تک رہائش کی مناسب سہولیات سے محروم ہیں۔ یہ بات بین الاقوامی ادارہ برائے مہاجرت آئی او ایم کی طرف سے منگل کے روز جنیوا میں بتائی گئی۔

اس ادارے کے مطابق ان لاکھوں روہنگیا مہاجرین کو ہنگامی بنیادوں پر رہائشی سہولیات کی اشد ضرورت ہے۔ میانمار کی ریاست راکھین میں اگست کے اواخر سے شروع ہونے والی خونریزی کی تازہ لہر کے دوران اب تک پانچ لاکھ سے زائد مسلم اقلیتی روہنگیا مہاجرین ہمسایہ ملک بنگلہ دیش میں پناہ لے چکے ہیں۔ ان میں سے ہزارہا تیز ہواؤں اور بارش کے باوجود کھلی جگہوں پر شب بسری پر مجبور ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY