خواتین کی چوٹی کاٹنے کے واقعات کے خلاف احتجاج کی کال دینے والی حریت قیادت کو گھروں میں نظر بندکردیا گیا ، سری نگر کے 7تھانوں کی حدود میں کرفیو جیسی پابندیاں عائدکردی گئی جبکہ احتجاجی مظاہرے کی کال دینے پر حریت رہنما یاسین ملک کو گرفتار کرلیا گیا۔
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے مظالم کی انتہا کردی، مظالم کے خلاف آواز اٹھانے والوں پر زندگی ہی تنگ کردی گئی ہے۔
احتجاج سے خوفزدہ قابض بھارتی انتظامیہ نے خواتین کی چوٹی کاٹنے کے واقعات کے خلاف احتجاج کی کال دینے والی حریت قیادت کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کردیا۔
یاسین ملک کو آج صبح ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کرلیا گیا جبکہ دیگر حریت قیادت کو گھروں میں نظر بند کردیا گیا ۔
دوسری جانب قابض انتظامیہ نے سری نگر کے سات تھانوں کی حدود میں کرفیو جیسی پابندیاں بھی عائد کردیں۔
واضح رہے کہ مقبوضہ وادی میں خواتین کو ہراساں کرنے کے بڑھتے ہوئےواقعات پر سید علی گیلانی ، میرواعظ اور دیگر حریت رہنماؤں نے آج احتجاج کی کال دی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY