حریک انصاف کے سربراہ عمران خان نےسابق وزیراعظم نوازشریف کو خود سے موازنہ نہ کرنے کا مشورہ دیدیا اور کہا کہ جب کیس ایک جیسا نہیں تو موازنہ کیسا ؟نواز شریف کا نظریہ دھاندلی سے اقتدار میں آنا اور پیسا بنانا ہے ۔
لیہ میں جلسہ عام سے خطاب میں عمران خان نے کہا کہ ہمارے پاکستان میں غریب قوم کا پیسا پریزیڈنٹ ہاؤس،وزیراعظم ہاؤس پرخرچ نہیں ہوگا،اقتدار میں آکر پیسے میٹرو پر نہیں عوام پر خرچ کریں گے، غریبوں کے لیئے پالیساں بنائیں گے۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ زرداری اور نوازشریف کے اقتدار سے پہلے ہر پاکستانی 35ہزار روپے کا مقروض تھا آج یہ قرضہ 1 لاکھ 20ہزار تک پہنچ چکا ہے ۔

عمران خان کا مزید کہناتھاکہ خیبرپختونخوا میں پہلی بار ڈیڑھ لاکھ بچے پرائیویٹ سے سرکاری اسکولوں میں آئے، ہم نے پختونخوا میں سرکاری اسکولوں کامعیار بڑھایا، 40 ہزار نئے اساتذہ لائے۔
پی ٹی آئی چیئرمین نے پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ محمود اچکزئی تمہارے ضمیر کی بہت چھوٹی قیمت لگی ہے ،تم اپنا سارا ٹبر لے کر اسمبلی چلے گئے ، تم نے پشتونوں کو ہی شرمندہ کرادیا۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ میرا کیس سپریم کورٹ پہنچا تو میرا موازانہ نوازشریف سے کیا گیا ، کہتا ہوں نوازشریف کا مجھے سے نہیں سلطانہ ڈاکو سے یا فلپائن کے کارکوس سےموازانہ کرو جو قوم کی دولت ملک سے باہر لے گیا تھا ،میرا تو جینا مرنا پاکستان میں ہے ، میں وہ پاکستانی ہوں جس نےباہرکمایااورپیسا پاکستان لایا۔
انہوں نے یہ بھی کہا کہ رائیونڈ کی سیکیورٹی پر 5 سالوں میں 7 ارب خرچ کئے گئے اور7 کروڑ روپے کی دیوار بنائی گئی ،عوام کے ٹیکس کے پیسے ان کی عیاشیوں پر خرچ نہیں ہوں گے ہم انہیں ایسا کرنے بھی نہیں دیں گے ۔

SHARE

LEAVE A REPLY