کراچی کنگز پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) تھری کی ناقابل شکست ٹیم بن گئی، لاہور قلندرز کو ایونٹ کے آٹھویں میچ میں 27 رنز ہرا دیا۔
دبئی انٹرنیشنل کرکٹ اسٹیڈیم میں کھیلے گئے میچ میں 160رنز کے تعاقب میں لاہور قلندرز کی ٹیم 132 رنز تک محدود رہی۔

لاہور قلندرز کی پہلی وکٹ پہلے ہی اوور کی دوسری گیند پر 1 کے اسکور پر گری، پہلا میچ کھیل رہے عثمان خان شنواری نے سنیل نارائن صفر کو وکٹ کیپر محمد رضوان کی مدد سے قابو کرلیا۔
دوسری وکٹ پر کپتان برینڈن مکلم اور فخرزمان نے69 رنز کی شراکت قائم کی، جو شاہد آفریدی نے توڑی، 2 چوکوں کی مدد سے 17رنز بنانے والے فخر زمان کو روی بھوپارا کی مدد سے قابو کیا۔

اسکور میں 2 رنز کے اضافے کے بعد کپتان برینڈن مکلم کو عماد وسیم نے میدان بدر کر دیا، لاہور قلندرز کے قائد نے 2 چھکوں اور 5 چوکوں کی مدد سے 44 رنز کی اننگز کھیلی۔
لاہورقلندرز کی چوتھی وکٹ 81 کے اسکور پر مل گئی ، عمراکمل ایک بار پھر ناکام ثابت ہوئے ،6کے انفرادی اسکور پر شاہد آفریدی نے محمد رضوان کی مدد سے پویلین کا راستہ دکھایا۔

کراچی کنگز کو پانچویں وکٹ 91 کے اسکور پر گرگئی ، سہیل اختر 2چوکوں کی مدد سے 9رنز ہی بناپائے تھےکہ آفریدی کا تیسرا شکار بن گئے ۔
عماد وسیم الیون کو چھٹی وکٹ 114کے اسکور پر گری ، 15رنز بنانے والے آغاسلمان کو عثمان شنواری نے آئوٹ کیا ۔
لاہور قلندرز کو ساتواں نقصان 117رنز پر اٹھانا پڑا، دنیش رامدین 11رنز کا خوبصورت کیچ پوائنٹ پر کھڑے ڈینلی نے کیا تو میچ میں کراچی کی کامیابی کے امکانات روشن ہوگئے۔

مکلم الیون کی آٹھویں وکٹ 124 کے اسکور پر گری ،یاسر شاہ 6رنز کو ملز نے بولڈ کردیا ،126رنز پر شاہین شاہ آفریدی کو عثمان شنواری نے میدان بدر کردیا ۔
دسویں وکٹ پر لاہور قلندرز کے سہیل خان اور مستفیض الرحمٰن نے 6 رنز بنائے لیکن وہ بھی ہدف کے تعاقب میں ناکام رہے اور پوری ٹیم 132رنز پر ڈھیر ہوگئی ۔
کراچی کنگز کی طرف سے شاہد آفریدی اور عثمان شنواری نے 3،3 جبکہ ٹائمل ملز نے 2 ، عماد وسیم اور محمد عرفان جونیئر نے ایک ایک وکٹ حاصل کی

SHARE

LEAVE A REPLY