شورش زدہ افریقی ملک صومالیہ میں سرگرم جہادی گروپ الشباب کے مختلف حملوں میں کم از کم گیارہ افراد مارے گئے ہیں۔ ان میں ایک خود کش کار حملہ فوجی ٹھکانے پر کیا گیا۔

اس حملے میں تین فوجی اور تین شہری شامل ہیں۔ جبکہ ایک دوسرا حملہ بلد شہر میں کیا گیا جس میں دو شہری ہلاک ہوئے۔ ان حملوں کی ذمہ داری الشباب نے قبول کر لی ہے۔

یہ حملے ایسے وقت میں کیے گئے ہیں جب صومالی صدر محمد عبداللہ فارماجَو یوگنڈا کے دورے پر ہیں اور افریقی یونین کے امن دستوں کے لیے کمپالا حکومت کی حمایت کے خواہشمند ہیں

SHARE

LEAVE A REPLY