وزیراعظم شاہد خاقان عباسی , 5 نکاتی ٹیکس اصلاحات کا اعلان

0
46

وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ انکم ٹیکس کی شرح کو کم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، ایک لاکھ روپے ماہانہ آمدنی پر کوئی ٹیکس نہیں ہوگا، جن لوگوں کے اثاثے باہر ہیں، وہ دو فیصد جرمانہ بھر کر ایمنسٹی اسکیم کا فائدہ اٹھاسکیں گے۔

وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے اسلام آباد میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے ٹیکس نہ دینے والوں کیلئے ٹیکس ایمنسٹی کا اعلان کیا، تاہم ان کاکہنا تھا کہ سیاسی لوگ اس اسکیم سے فائدہ حاصل نہیں کر سکیں گے۔

انہوں نے کہا کہ انکم ٹیکس کے حوالے سے ایک پیکیج ڈرافٹ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، ایک بڑا اور انقلابی قسم کا ٹیکس ریفارم شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، آئندہ شناختی کارڈ نمبر ہی ٹیکس نمبر ہوگا۔

وزیر اعظم نے کہا کہ پورے ملک میں صرف سات لاکھ لوگ انکم ٹیکس ادا کرتے ہیں، جب لوگ ٹیکس نہیں دیتے تو ان ڈائریکٹ ٹیکسوں کا بوجھ عوام پر پڑتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اڑتالیس لاکھ روپے سالانہ سے زائد آمدن پر 15 فیصد ٹیکس دینا ہوگا، 24 سے 48 لاکھ روپے سالانہ آمدن پر 10 فیصد ٹیکس ہوگا۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے 5 نکاتی ٹیکس اصلاحات کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ 12 لاکھ سالانہ آمدنی والے ٹیکس سے مستثنیٰ ہوں گے، 48 لاکھ سے زائد سالانہ آمدن پر 15 فیصد ٹیکس عائد ہو گا۔

SHARE

LEAVE A REPLY