انسانی حقوق کی کارکن اور نجی چینل کی تجزیہ کار گل بخاری لاہورمیں پراسراراندازسےلاپتاہوگئی تھی تاہم چندگھنٹےبعد واپس گھرپہنچ گئیں۔

پولیس کے مطابق نجی چینل میں سیاسی تجزیہ کار اور انسانی حقوق کے لئے کام کرنے والی خاتون گل بخاری لاہورمیں ٹاک شو کے لیئے ڈرائیور کے ساتھ گھر سے جا رہی تھیں کہ شیر پاؤ برج کے نزدیک چند گاڑیوں میں سوار افراد نے انہیں گاڑی سے نیچے اتارا اور اپنے ساتھ لے گئے ۔

خاتون کےلاپتاہونے کی خبر جنگل میں آگ کی طرح پھیل گئی،خاتون کےرشتہ دار اور انسانی حقوق کی کارکن حنا جیلانی تھانہ سرور روڈ مقدمہ درج کروانے پہنچ گئیں۔

اس دوران مختلف ٹی وی چینلز پر گل بخاری کے پراسراراندازسےلاپتاہونےکی خبریں نشر ہوتی رہیں تاہم چندگھنٹے بعدہی گل بخاری گھر پہنچ گئیں ۔

انہوں نے کسی بھی میڈیا کے نمائندے سے بات کرنے سے گریز کیا۔52 سالہ گل بخاری برطانوی شہریت بھی رکھتی ہیں۔

دوسری جانب سماجی کارکن گل بخاری کےلاہورسےلاپتہ ہونےکی خبرآتے ہی سوشل میڈیا پر اسکی بازگشت شروع ہوگئی تھی۔

مسلم لیگ ن کی رہ نما مریم نوازنےبھی سوشل میڈیا پر بیان میں کہا تھاکہ سماجی کارکن گل بخاری کا اغوا بہت پریشان کن خبر ہے.

SHARE

LEAVE A REPLY