بھارت کی وزارت قانون نے کہا ہے کہ مشہور اسلامی اسکالر ڈاکٹر ذاکر نائیک کی تنظیم اسلامک ریسرچ فاونڈیشن پر پابندی لگائی جاسکتی ہے۔

بھارتی انتہاپسند حلقوں اور مودی حکومت کی میڈیا کا الزام ہے کہ ڈھاکا میں ہونے والے حملے میں ملوث ایک شخص ذاکر نائیک سے متاثر تھا۔
ادھر ڈاکٹر ذاکر نائیک کا کہنا ہے کہ انھوں نے کبھی دہشت گردی کی حمایت نہیں کی۔ اور کسی کو کبھی بھی ایسے کسی اقدام کے لیے نہیں اکسایا بلکہ ہمیشہ اسلام کے ابدی پیغام امن کا پرچار کیا

SHARE

LEAVE A REPLY