ایسے حلف کو پڑھنا بھی کار جہاد ہے ۔ صفدر ھمدانی

0
196

عمران پہ غالب تھی لسان حلف نامہ
دنیا پہ عیاں ہو گئی شان حلف نامہ
صفدر وہ جو تبدیلی کے نعرے سے ہیں آئے
آسان بنائیں گے زبان حلف نامہ
۔۔۔۔۔۔۔۔
دم بخود تھے حافظ و سعدی کے سب دیوان بھی
سہما سہما سا لگا تھا صدر کا ایوان بھی
فیصلہ صفدر ہوا کب جیت کا یا ہار کا
ایک ہی کشتی میں تھے ممنون بھی عمران بھی
۔۔۔۔۔۔
الفاظ معانی کے سمندر میں ڈبوئے
عمران نے ممنون نے کیا پھول پروئے
ٹی وی پہ حلف نامے کا صفدر جو ہوا حال
غالب نے بھی سر پیٹ لیا میر بھی روئے
۔۔۔۔،،
اس سرزمیں میں روز نیا اک فساد ہے
حیرت ہے اس فساد پہ بھی خوب داد ہے
تلوار کا چلانا ہی صفدر نہیں جہاد
ایسے حلف کو پڑھنا بھی کار جہاد ہے ۔

صفدر ھمدانی

SHARE

LEAVE A REPLY