سابق مشیر پیٹرولیم ڈاکٹرعاصم حسین کے میڈیکل بورڈ کی رپورٹ کراچی کی احتساب عدالت میں جمع کرادی گئی جس کے مطابق کمردرد کے باعث ڈاکٹر عاصم کے لئے چلنا پھرنا ناممکن ہوتا جارہا ہے۔

ڈاکٹر عاصم کے 9 رکنی میڈیکل بورڈ نے ان کی صحت سے متعلق رپورٹ کراچی کی احتساب عدالت میں جمع کرائی ۔

رپورٹ کے مطابق ڈاکٹر عاصم کو کمر کے نچلے حصے میں تکلیف ہے، ریڑھ کی ہڈی میں گیپ کے باعث درد کی شکایت ہے اور فزیو تھراپی سے بھی کمر درد میں کوئی فرق نہیں پڑا۔

رپورٹ میں مزید بتایاگیا ہے کہ درد کے باعث ڈاکٹر عاصم کے لئے چلنا پھرنا ناممکن ہوتا جارہا ہے لہذا ضروری ہے کہ سرجری تک ان کی ہائیڈروتھراپی کی جائے۔

میڈیکل بورڈ نے ڈاکٹر عاصم کو وزن کم کرنے اور وہیل چیئر استعمال کرنے کا بھی مشورہ دیا ہے
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ترجمان ڈاکٹر عاصم کے مطابق ڈاکٹر عاصم حسین پر فالج کا حملہ ہوا ہے، فالج کے حملے سے ڈاکٹر عاصم حسین متاثر ہوئے ہیں او ر ہنگامی طور پر ڈاکٹر عاصم حسین کا طبی معائنہ کیا گیا ہے۔

ڈاکٹرز نے فوری طور پر ڈاکٹر عاصم کے دماغ کا ایم آر آئی کیاہے،ترجمان ڈاکٹر عاصم کے مطابق ڈاکٹر عاصم حسین پر فالج کا حملہ ذہنی دباؤ کی وجہ سے ہوا ہے اور ڈاکٹرز نے انہیں مکمل آرام کا مشورہ دیا ہے۔

ترجمان جناح اسپتال کے مطابق ڈاکٹر عاصم کی طبیعت خطرے سے باہر ہےاور ان کا ایم آر آئی، سٹی اسکین سمیت دیگر ٹیسٹ کیے جارہے ہیں۔

ڈاکٹر عاصم حسین کی طبیعت کی ناسازی پر ان کے اہل خانہ کی جانب سے دعائے صحت کی اپیل کی گئی ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY