نو منتخب صدر مملکت ڈاکٹرعارف علوی نےقومی اسمبلی کی نشست سےاستعفیٰ دےدیا۔

ذرائع کے مطابق ڈاکٹرعارف علوی نےاپنااستعفیٰ قومی اسمبلی سیکریٹریٹ کوبھجوادیا۔

ڈاکٹر عارف علوی پہلی مرتبہ 2013 کے الیکشن میں کراچی کے حلقہ 250 سے قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے۔ او ر پھر25 جولائی 2018 میں91 ہزارکے قریب ووٹ لے کر کراچی سے قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوئے جبکہ ان کے مقابلے میں تحریک لبیک پاکستان کے امیدوار سید زمان علی نے ساڑھے 24 ہزار ووٹ لیے۔

ڈاکٹر عارف علوی پاکستان تحریک انصاف کے قیام سے قبل ہی عمران خان کے ساتھیوں میں سے ہیں۔پاکستان تحریک انصاف کے آئین کے مصنفین میں ایک عارف علوی بھی شامل ہیں۔

پاکستان تحریک انصاف کےسرگرم کارکنوں کے مطابق لاہورکے ایک مال میں مظاہرے کے دوران ان پر فائرنگ ہوئی جس میں وہ زخمی ہوئے جس کے بعد انہوں نے فخریہ انداز میں اپنادائیں بازو بلند کیا (جس میں گولی لگی تھی) اورگولی کےنشان کوکہا کہ یہ پاکستان میں جمہوریت کے لیے ان کی جدوجہدہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY