پاناما لیکس پرمجوزہ تحقیقاتی کمیشن تشکیل سے پہلے ہی سپریم کورٹ میں چیلنج

0
381

وطن پارٹی کے بیرسٹر ظفر اللہ خان کی جانب سے دائر درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ چیف جسٹس انور ظہیر جمالی جوڈیشل کمیشن کیلئے حکومتی چھٹی پہلے ہی رد کر چکے ہیں۔

چیف جسٹس نے تحقیقات کیلئے قانون سازی کی تجویز دی تھی۔ انکوائری کمیشن بل دو ہزار سولہ پارلیمنٹ میں زیر التوا ہے۔ ایسے میں عدالت پارلیمنٹ کے اختیار میں مداخلت کیسے کر سکتی ہے؟

درخواست میں کہا گیا ہے کہ پارلیمنٹ تمام اداروں کی ماں ہے۔ عدالتیں پارلیمنٹ کے قوانین پر عمل کی پابند ہیں۔ عدالت معاملے کی تحقیقات کیلئے ٹی او آر بنانے کی مجاز نہیں۔

عدالت کو سیاسی خاندان کے تنازعے میں اختیار سماعت نہیں ہے۔ اس طرح کوئی بھی مخالف عدلیہ کو سیاسی انتقام کے لیے استعمال کرے گا۔ وطن پارٹی نے پاناما لیکس کے مرکزی مقدمے میں فریق بننے کی استدعا بھی کر دی

SHARE

LEAVE A REPLY