روسی حکومت کے مطابق افغانستان میں قیام امن کے مذاکرات نو نومبر کو ہوں گے۔ اس میں افغان صدر اشرف غنی اور طالبان کے قطر میں مقیم نمائندوں کی شرکت کی تصدیق کر دی گئی ہے۔

ماسکو امن مذاکرات میں چین، بھارت، ایران اور پاکستان کے علاوہ پانچ وسطی ایشیائی ریاستوں کو بھی مدعو کیا گیا ہے۔ ان مذاکرات میں امریکا اور چند دیگر ممالک کو بھی اپنے خصوصی نمائندے بھیجنے کی درخواست کی گئی ہے۔

طالبان کا نمائندہ وفد پہلی مرتبہ کسی انٹرنیشنل مذاکراتی فورم میں شریک ہو گا۔ اپریل سن 2017 میں بھی روس نے افغانستان میں قیام امن کے موضوع پر ایک بین الاقوامی امن کانفرنس کا انعقاد کروایا تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY