چترال کے علاقے شیر سال کے مقام پر برفانی تودہ 5مکانات پر گر گیا،15 افراد کی لاشیں نکال لی گئیں، جاں بحق افراد میں 6خواتین ،6بچے ،2مرد شامل ہیں ، تودے تلے دبے 11افراد کو بحفاظت نکال لیا گیا۔وزیراعظم نے چترال میں برفانی تودہ گرنےسےجانی نقصان پراظہارافسوس کرتے ہوئے وفاقی اور صوبائی اداروں کو فوری امدادی کارروائی کی ہدایت کی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ راستے بند ہونے کے باعث زخمیوں کو اسپتال پہنچانے میں مشکلات کا سامنا ہے ۔برفباری کی وجہ سے راستے بند ہیں اورامدادی ٹیمیں پیدل ہی جائے حادثہ پہنچنے کی کوشش کر رہی ہیں ۔

کمانڈنٹ چترال اسکاؤٹس نظام الدین کے مطابق برفانی تودے گرنے سے جاں بحق ہونے والی چھ خواتین ،چھ بچوں اور دو مردوں کی لاشیں نکال لی گئی ہیں ۔

مقامی سطح پر لوگوں نے امدادی کاروائی شروع کردی ہے ،امدادی ٹیمیں پیدل روانہ کردی گئی ہیں،برف کےباعث گاڑیاں اورگہرے بادلوں کی وجہ سے ہیلی کاپٹر بھی نہیں جاسکتا۔

ریسکیو ذرائع کا کہنا ہے کہ برفانی تودے تلے سے 11افراد کوزندہ نکال لیاگیا ہے جس میں سے دو زخمی ہیں ۔

واضح رہے کہ چترال بھر میں وقفے وقفے سے برفباری ہو رہی ہے ۔

ادھر وزیراعظم نوازشریف نے برفانی تودہ گرنےسےجانی نقصان پراظہارافسوس کیا ہے اور وفاقی وصوبائی اداروں کو فوری امدادی کارروائی کی ہدایت کی ہے ۔

وزیراعظم نے این ڈی ایم اے کو فوری امدادی کارروائیاں شروع کرنے اورمتاثرین کو خوراک، طبی امداد اور پناہ مہیا کرنے کی ہدایت کردی

SHARE

LEAVE A REPLY