بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کا کہنا ہے کہ ٹرین حادثہ پاکستان میں تیار کی گئی ’سازش‘ کے باعث جان بوجھ کر کیا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی ’اے ایف پی‘ کے مطابق ریاست اتر پردیش کے انتخابات سے قبل ایک ریلی سے خطاب کے دوران نریندر مودی نے کہا کہ ’پولیس کو گزشتہ سال نومبر میں پیش آنے والے اس واقعے میں تخریب کاری کے ثبوت ملے تھے، جس کی سازش پاکستان میں کی گئی۔‘

یاد رہے کہ نومبر 2016 میں اتر پردیش میں پیش آنے والے اس ٹرین حادثے میں 148 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

پولیس نے بھارتی وزیر اعظم کے اس دعوے کی کسی حوالے سے تصدیق نہیں کی۔

ریاستی ضلع گوندا میں انتخابی ریلی سے خطاب کے دوران نریندر مودی نے کہا کہ ’کانپور میں پیش آنے والے اس حادثے کے بعد چند افراد کو گرفتار کیا گیا اور پولیس کو پتہ چلا کہ حادثہ درحقیقت ایک سازش تھی جو سرحد پار تیار کی گئی۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’وہ لوگ جنہوں نے سازشیوں کی مدد کی اگر منتخب ہوگئے تو کیا گوندا اور ملک محفوظ رہے گا؟‘

واضح رہے کہ بھارتی سیاستدانوں کی انتخابات سے قبل عوام میں پاکستان مخالف جذبات ابھارنے کی طویل تاریخ ہے اور وہ ملک میں دہشت گردی کے ہر واقعے اور ایسے حادثات جن میں جانی نقصان ہوا ہو، کا ذمہ دار اپنے سیاسی فائدوں کے لیے پاکستان کو ٹھہراتے رہے ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY