سی ٹی ڈی اور دہشت گردوں کے درمیان ہونے والے فائرنگ کے تبادلہ میں 10 دہشت گرد ہلاک ہو گئے، ہلاک ہونے والے دہشت گردوں میں مال روڈ بم دھماکہ کا سہولت کار بھی مارا گیا۔

سی ٹی ڈی حکام پانچ دہشتگردوں کو لے کر رات گئے دھماکا خیز مواد اور اسحلہ کی برآمدگی کیلئے نکلے لیکن رنگ روڈ کے قریب آٹھ سے نو دہشتگردوں نے حملہ کردیا اور اپنے ساتھیوں کو چھڑا کر لے گئے۔

حملے میں جو دہشتگرد چھڑائے گئے ان میں انوار الحق بھی شامل تھا جو مال روڈ دھماکے کا ملزم اور سہولت کار تھا۔
سی ٹی ڈی کے مطابق حملہ آور اپنے ساتھیوں کو لے کر دریائے راوی کی طرف فرار ہوئے۔ ان کا تعاقب کیا گیا اور مناواں پولیس اسٹیشن کی حدود میں انھیں پکڑنے کی کوشش کی گئی جہاں دہشتگردوں نے ہتھیار ڈالنے کے بجائے فائرنگ شروع کردی۔

جوابی فائرنگ میں دس دہشتگردوں کو ٹھکانے لگا دیا گیا، جن میں مال روڈ دھماکے کا ملزم اور سہولت کار انوار الحق بھی شامل ہے۔ دیگر چار دہشتگردوں عبداللہ، عطاالرحمان، امام شاہ،عرفان خان کی شناخت بھی کرلی گئی ہے۔ واقعے کی تحقیقات شروع کردی گئی ہے۔
سی ٹی ڈی کا کہنا ہے کہ کچھ دہشتگرد فرار ہوگئے ہیں جن کی تلاش جاری ہے جبکہ مارے گئے دہشت گرودں کے قبضے سے دو کلو بارودی مواد، تین کلاشنکوفیں، تین پستول اور تین موٹر سائیکل برآمد ہوئے ہیں

SHARE

LEAVE A REPLY