منصف ہو تو ایک ہی بار کرو انصاف۔از۔صفدرھمدانی

0
116

منظر کچھ آنکھوں کو حیرت دیتے ہیں

اپنے ہیں اعمال جو ذلت دیتے ہیں

منصف اعلی اندھا گونگا بہرہ ہے

عادل تو قوموں کو عزت دیتے ہیں

بند عدالت کا دروازہ کھولے کون

بے بس ہیں ہم بارِ امانت دیتے ہیں

فیصلوں کو محفوظ بنا کر رکھ دینا

ایسے سب اقدام ندامت دیتے ہیں

مجرم کون ہے فیصلہ اسکا کون کرے
کس کو ہم یہ حق عدالت دیتے ہیں

منصف ہو تو ایک ہی بار کرو انصاف
مہلت ہم تا روز قیامت دیتے ہیں

لاشوں کی پامالی کی تاریخ پڑھو
شجرے صفدر آپ شہادت دیتے ہیں

SHARE

LEAVE A REPLY