سعودی عرب کی سربراہی کانفرنس کی کوئی وقعت نہیں،ایرانی صدر روحانی

0
206

ایرانی صدر حسن روحانی نے امریکی صدر ٹرمپ کے دورہ سعودی عرب کے دوران منعقدہ سمٹ کو ’محض ایک شو‘ قرار دیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ اس اجلاس کی کسی بھی قسم کی کوئی عملی اور سیاسی حیثیت نہیں تھی۔

روحانی کے مطابق اس وقت امریکا اور ایران کے تعلقات ایک مشکل راستے پر ہیں۔ انہوں نے تہران کی طرف سے بیلسٹک میزائلوں کے تجربات جاری رکھنے کا اعلان بھی کیا۔

اپنے دوسری مرتبہ صدر منتخب ہونے کا حوالہ دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ یہ واضح پیغام ہے کہ تہران برابری کی سطح پر عالمی برادری سے روابط کے لیے تیار ہے۔

ایران نے الزام لگایا ہے کہ امریکا مشرق وسطیٰ میں ’خطرناک دہشت گردوں‘ کو اسلحہ فراہم کر رہا ہے۔ تہران کا یہ بھی کہنا ہے کہ امریکا عرب ممالک کو اسلحہ بیچنے کے لیے ’ایرانوفوبیا‘ میں مبتلا ہو گیا ہے۔

اس سے قبل سعودی عرب کے دورے کے دوران امریکی صدر نے ایران پر مشرق وسطیٰ میں عدم استحکام پھیلانے اور دہشت گردوں کی معاونت کرنے کا الزام لگایا تھا۔ تاہم آج ایرانی وزارت داخلہ کے ترجمان نے ٹرمپ کے ان بیانات بے بنیاد قرار دیتے ہوئے مسترد کیا ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY