کاش بخشش کی دے بلال سند

0
237

روشنی لاالٰہ الّا ھو
زندگی لا الٰہ الّا ھو
پڑھ رہے ہیں ازل سے اہلِ یقیں
ہر گھڑی لاالٰہ الّا ھو
یہ مِٹاتا ہے قلبِ مومن سے
تیرگی لاالٰہ الّا ھو
تیرے ہی ذکر سے منور ہے
ہر صدی لاالٰہ الّا ھو
ہے وظیفہ ہر ایک مومن کا
دائمی لا الٰہ الّا ھو
تیرا ہی درس دینے آئے تھے
سب نبی لاالٰہ الا ھو
مومنوں میں ہے تیرے ہی باعث
دوستی لا الٰہ الا ھو
شاہِ اجمیر کو ملی تجھ سے
خواجگی لا الٰہ الا ھو
تیرے اعداء سے ہے فقط اپنی
دشمنی لا الٰہ الا ھو
تیری مدحت سے ہو گئی روشن
شاعری لا الٰہ الا ھو
کاش ہو تیرے ذکر میں ہی بسر
زندگی لاالٰہ الّا ھو
ایک معبود کی سکھاتا ہے
بندگی لاالٰہ الّا ھو
کاش بخشش کی دے بلال سند
مجھ کو بھی لا الٰہ الّاھو

SHARE

LEAVE A REPLY