پاناما کیس کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے وزیراعظم کے قریبی عزیز طارق شفیع کو آج طلب کیا ہے۔ جے آئی ٹی کے پاس اپنی رپورٹ مکمل کرنے کے لئے8 دن باقی رہ گئے ہیں۔
وزیراعظم کے قریبی عزیز طارق شفیع کو دوسری بار 2جولائی کو طلب کیا گیا ہے وہ اس سے قبل 15 مئی کو اپنا پہلا بیان ریکارڈ کروا چکے ہیں۔
مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی جانب سے 25 جون کو سمن جاری ہونے والے سمن کے مطابق حسن نواز کو3 جولائی اور حسین نواز کو 4 جولائی کو پیش ہونے کا کہا گیا ہے۔ جے آئی ٹی میں حسین نواز کی یہ چھٹی اور حسن نواز کی تیسری پیشی ہو گی۔
عید سے پہلے چاند رات کو جاری سمن میں نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز کو 5 جولائی کو دن 11 بجے پیش ہونے کا سمن جاری کیا گیا ہے۔ مریم نواز پہلی بار مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہوں گی۔
جے آئی ٹی نے مریم نواز کو تمام متعلقہ دستاویزات کے ساتھ طلب کیا ہے۔اس سے قبل ان کے شوہر کیپٹن صفدر بھی ٹیم کے سامنے پیش ہو چکے ہیں۔
اس سے پہلے وزیراعظم نوازشریف اور ان کے بھائی وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف بھی اپنا بیان ریکارڈ کراچکے ہیں۔ وزیراعظم نواز شریف کی اہلیہ کلثوم نواز کو مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے اب تک طلب نہیں کیا۔
کل سیکورٹی اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان کے چیئرمین ظفر حجازی ادارے کے چار دیگر افسران کے ساتھ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہوئے۔
ایس ای سی پی کی اعلی افسران نے شریف خاندان کی چوہدری شوگر ملز کے خلاف تحقیقات کو روک دینے کے معاملے پر جے آئی ٹی کو بیانات ریکارڈ کرائے۔
مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے پاس اپنی رپورٹ مکمل کرنے کے لئے صر ف8دن رہ گئے ہیں، سپریم کورٹ نے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کو 10جولائی تک رپورٹ عدالت میں جمع کرانے کی ہدایت کر رکھی ہے

SHARE

LEAVE A REPLY