عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا کہ مسلم لیگ(ن)کے 44ارکان قومی اسمبلی الگ گروپ بنانے کو تیار بیٹھے ہیں۔
راولپنڈی پریس کلب میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ مسلم لیگ(ن ) کے 188میں سے59ایم این اے مشرف کے ساتھ بھی تھے اور اس وقت بھی 44ایم این اے الگ گروپ بنانے کیلئے تیار ہیں۔

وفاقی وزراء اورمسلم لیگ ن کے رہنمائوں نے کہاہےکہ عدالتی 58ٹو بی بنانے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ حکومت جے آئی ٹی رپورٹ سپریم کورٹ میں چیلنج کریگی اورہم آف شور کمپنی کا جواب سپریم کورٹ میں دیں گے اور دلیل کے ساتھ آئیں گے۔
انہوں نے وزیراعظم کے استعفے کامطالبہ مسترد کرتے ہوئے کہاکہ جمہوری نظام کو چلنے دیا جائے ، تمام ریکارڈ عدالت میں پیش کرینگے ،سوئی سے لیکر مرسڈیز تک ہر ریکارڈ موجود ہے، دسویں جلد آنے تک جے آئی ٹی رپورٹ نامکمل ہے،تمام جلدیں قطری خط رد کرنے کیلئے استعمال ہوئیں ، مخالفین کا ہر سطح پر مقابلہ کیا جائیگا،پاناما کا ڈائریکٹر ملک سے باہر اور اداکار اندرہے۔
ان خیالات کا اظہار اسحق ڈار، بیرسٹر ظفر اللہ، دانیال عزیز، طلال چوہدری، حنیف عباسی نے الگ الگ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ان رہنمائوں کا کہنا تھا کہ عمران خان مسلم لیگ (ن) کے برسراقتدار کے پہلے دن سے کبھی دھاندلی کے نام دھرنا اور کبھی اسلام آباد کو یرغمال بنا کر حکومت کو گرانے کی کوششیں کرتے رہے تاہم وہ کامیاب نہیں ہوئے اس دفعہ بھی رو عمران رو ہی ہوگا۔

SHARE

LEAVE A REPLY