افغانستان سے مویشیوں کی سپلائی پر پابندی ختم

0
183

مال مویشیوں کے سوداگروں نے افغانستان سے پاکستان کو مال مویشیوں کی سپلائی پر پابندی ختم کر دی ہے ۔ اس اقدام کے بعد انہوں نےافغانستان سے خیبر ایجنسی میں بھیڑ اور بکروں کو لانا شروع کر دیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق جب حکومت پاکستان نے افغانستان سے در آمد ہونے والے بھیڑ اور بکروں پر فی جانور 2500 روپے ایجنسی ٹیکس لگایا تو اس پر پاکستانی اور افغانی مال مویشیوں کے تاجروں نے سخت ردل عمل ظاہر کیا اور اس کو زیادہ ٹیکس قرار دیا۔
اس پر انہوں احتجاج کے طور پر افغانستان سے پاکستان کو مویشی لانا بند کر دیاجس کے نتیجے میں صارفین بھی شدید پریشان ہو گئے اور انہوں نے بھی اس زیادہ ٹیکس کو زیادتی قرار دیا ۔
پولیٹکل انتظامیہ خیبر ایجنسی کی کوششوں سے یہ مسئلہ حل ہوگیا ہے اور اب مال مویشیوں کے سوداگروں سے صرف فی مویشی 500روپے ایجنسی ٹیکس وصول کیا جائے گا اور اس ٹیکس کے علاوہ ان سے ایک پیسہ بھی اضافی ٹیکس وصول نہیں کیا جائے گا۔
خیبرا یجنسی کے لوگوں نے حکومت کے اس فیصلے کو اچھا اقدام قرار دیا ہے اور اُمید ظاہر کی ہے کہ دوسرے سالوں کی طرح اس سال بھی ان کو ان کے دہلیزوں پر ہی مناسب قیمتوں پر عید کی قربانی کے لئے جانور مل جائیں گے

SHARE

LEAVE A REPLY