ابو ظہبی ٹیسٹ کے آخری روز پاکستانی باؤلروں نے شاندار گیند بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے سری لنکن ٹیم کو 138 رنز پر آؤٹ کردیا۔

پاکستان کو پہلا ٹیسٹ جیتنے کے لیے 136 رنز کا ہدف ملا ہے جو اسے کم از کم 60 اوورز میں پورا کرنا ہوگا۔

شیخ زید اسٹیڈیم میں جاری دو ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ کے پانچویں روز سری لنکا نے اپنی دوسری اننگز چار کھلاڑیوں کے نقصان کے بعد 69 رنز سے دوبارہ شروع کی۔

کھیل کے آغاز کے ساتھ ہی پاکستانی یاسر شاہ نے شاندار باؤلنگ کرتے ہوئے 51 رنز کے عوض 5 کھلاڑیوں کو آؤٹ کرکے سری لنکن ٹیم کو مشکلات سے دوچار کیا اور پاکستان کی فتح کی امیدوں کو روشن کردیا۔

سری لنکا نے اپنی پہلی اننگز میں کپتان دنیش چندی مل کی 155 رنز کی ناقابلِ شکست بلے بازی کے بدولت 419 رنز اسکور کیے جبکہ دیگر کھلاڑیوں میں اوپننگ بلے باز کرونارتنے 93 اور نروشان ڈک ویلا 83 رنز بنا کر نمایاں کھلاڑی رہے۔

پاکستان کی جانب سے محمد عباس اور یاسر شاہ نے 3، 3 اور حسن علی نے 2 اور ڈیبیو کرنے والے حارث سہیل نے 1 سری لنکن کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

پاکستانی اوپنر شان مسعود اور سمیع اسلم نے پہلی وکٹ پر سینچری پارٹنرشپ قائم کرتے ہوئے پاکستان کو پہلی اننگز میں اچھا آغاز فراہم کیا جبکہ دونوں کھلاڑی بالترتیب 59 اور 51 رنز اسکور کرکے آؤٹ ہوئے۔

اوپنرز کے آؤٹ ہونے کے بعد مڈل آرڈر بیٹسمین اظہر علی نے 85 رنز کی بدولت ٹیم کا اسکور آگے بڑھانے میں مدد دی۔

ڈیبیو کرنے والے حارث سہیل نے ٹیل اینڈرز کے ساتھ بہترین بلے بازی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 76 رنز کی اننگز کھیلی اور پاکستان کا اسکور اننگز کے اختتام تک 422 رنز تک پہچا دیا۔

سری لنکا کی جانب سے رنگانا ہیراتھ نے شاندار باؤلنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 93 رنز کے عوض 5 پاکستانی کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

سری لنکا نے 3 رنز کے خسارے کے ساتھ بلے بازی کا آغاز کیا اور ابتداء سے ہی پاکستانی اسپن باؤلروں نے لنکن بیٹسمینوں کو کریز پر سیٹ ہونے کا موقع نہیں دیا اور چوتھے روز کھیل کے اختتام سے قبل ہی 69 رنز پر 4 کھلاڑیوں کو آوٹ کردیا تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY