پاکستان نے افغان جنگ کے جلد خاتمے اور خطے میں امن کی بحالی پر بات چیت کے لیے چار فریقی تعاون گروپ (کیو سی جی) کا اجلاس رواں ماہ 16 اکتوبر کو عمان کے دار الحکومت مسقط میں طلب کر لیا۔

افغانستان میں امن و استحکام کو بحال کرنے کے لیے پاکستان، امریکا، چین اور افغانستان پر مشتمل چار فریقی گروپ کا پہلا اجلاس گذشتہ برس جنوری میں منعقد کیا گیا تھا تاہم اب تک اس کے 5 اجلاس منعقد ہو چکے ہیں جبکہ آخری مرتبہ اس گروپ کا اجلاس پاکستان میں مری کے مقام پر مئی 2016 میں منعقد کیا گیا تھا۔

وفاقی وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف نے اپنے حالیہ دورہ امریکا کے دوران واشنگٹن میں موجود وائس آف امریکا (وی او اے) اردو میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان مسقط میں منعقدہ اجلاس میں اپنا کلیدی کردار ادا کرے گا جبکہ افغان طالبان کو مذاکرات کی میز پر لانے کی کوشش بھی کی جائے گی۔

خواجہ محمد آصف نے افغان طالبان پر پاکستان کے اثرورسوخ کو ایک گمان قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس وقت طالبان پر پاکستان سے زیادہ روس کا اثر موجود ہے

SHARE

LEAVE A REPLY