روس نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں پیش کردہ اُس قرار داد کو ویٹو کر دیا ہے، جس کے تحت شام میں کیمیاوی حملوں کی تحقیقات کی مدت میں توسیع کرنے کی بات کی گئی تھی۔

یہ نواں موقع ہے کہ ماسکو حکومت نے اپنے اتحادی ملک شام سے متعلق سلامتی کونسل میں پیش کردہ کسی قرار داد کو ویٹو کیا ہو۔ اقوام متحدہ کے لیے روسی سفیر کے مطابق یہ تحقیقات جانبدار ہیں، اس لیے اس کی حمایت نہیں کی جا سکتی۔ امریکا نے اس پیشرفت پر روس کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY