يورپی يونين نے جنوبی امريکی ملک وينزويلا کے خلاف پابندياں عائد کر دی ہيں۔ وينزويلا کو اسلحے اور فوجی ساز و سامان کی فروخت پر پابندی اس ليے لگائی گئی ہے کہ يہ سامان سياسی مقاصد کے ليے استعمال نہ ہو سکے۔

ان پابنديوں کے اعلان کے ساتھ آج پیر کو جاری کردہ يورپی یونین کے ایک بيان ميں يہ بھی کہا گيا کہ وینزویلا کو درپيش سياسی بحران کا حل تعميری مذاکرات کے ذريعے ہی نکل سکتا ہے۔

اس سے قبل امريکا کی طرف سے بھی وینزویلا کے صدر نکولاس مادورو کو ایک ’آمر‘ قرار ديتے کراکس حکومت کے خلاف پابندياں لگائی جا چکی ہيں۔ یورپی پابندیوں کے بعد اب صدر مادورو پر دباؤ زیادہ ہو جائے گا۔

SHARE

LEAVE A REPLY