عالمی ادارہ صحت نے خبردار کيا ہے کہ سعودی عسکری اتحاد کی جانب سے يمنی ہسپتالوں کے لیے ايندھن، پانی کے پمپس اور امدادی سامان روکنے کی وجہ سے خطرہ پیدا ہو گیا ہے کہ اس جنگ زدہ ملک میں ہيضے کی وباء دوبارہ پھيل سکتی ہے۔

يمن ميں پہلے ہی تقريباً آٹھ ملين افراد کو ہيضے کی وباء کا خطرہ ہے تاہم پچھلے گيارہ ہفتوں سے اس بيماری ميں مبتلاء ہونے والے نئے افراد کی تعداد ميں کمی واقع ہو رہی ہے۔

يمن ميں ڈبليو ايچ او کے سربراہ نے اتوار تین دسمبر کو جنيوا ميں بتايا کہ يمن ميں اب بھی پينتيس اضلاع سے ہيضے کی شکايات موصول ہو رہی ہيں۔

SHARE

LEAVE A REPLY