امریکا اپنا فیصلہ تبدیل کرے، فلسطین کی حمایت جاری رکھیں گے: ملیحہ لودھی

0
88

جنرل اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے ملیحہ لودھی نے کہا کہ خود مختار فلسطین کے سوا کچھ قبول نہیں۔

دھمکیاں جوتی کی نوک پر، پاکستان نے امریکا سے سفارتخانے کی بیت المقدس منتقلی کا فیصلہ تبدیل کرنے کا مطالبہ کر دیا۔

جنرل اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے ملیحہ لودھی نے فلسطین کی غیر متزلزل حمایت جاری رکھنے کا اعلان کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ خود مختار فلسطینی ریاست کے قیام کے سوا کوئی دوسرا پلان قبول نہیں کریں گے۔

قراداد پیش کیئے جانے سے پہلے کی خبروں کے مطابق

اقوام متحدہ میں پاکستانی سفیر ملیحہ لودھی نے کہا ہے کہ فلسطین اور القدس کا تحفظ پاکستان کی خارجہ پالیسی کا مرکزی اصول ہے.1967 میں جنرل اسمبلی کے خصوصی اجلاس میں مقبوضہ بیت المقدس سے متعلق قرارداد بھی پاکستان ہی کی قیادت میں پیش کی گئی تھی۔ مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارلحکومت قرار دینے کے امریکی فیصلے کے خلاف اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں عرب اور او آئی سی کی جانب سے قرارداد پیش کی جا رہی ہے جسے پیش کرنے والوں میں پاکستان بھی شامل ہے۔اقوام متحدہ میں پاکستانی سفیر ملیحہ لودھی نے توقع ظاہر کی ہے کہ فلسطین اور القدس کا تحفظ پاکستان کی خارجہ پالیسی کا مرکزی اصول ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ 1967 میں جنرل اسمبلی کے خصوصی اجلاس میں مقبوضہ بیت المقدس سے متعلق قرارداد بھی پاکستان ہی کی قیادت میں پیش کی گئی تھی۔ان کا کہنا تھا کہ امریکی صدر کے فیصلے سے مشرق وسطی میں تناﺅ بڑھے گا۔ فیصلہ واپس لیا جائے تاہم انہوں نے امید ظاہر کی قرارداد بھاری اکثریت سے منظور کر لی جائے گی۔

SHARE

LEAVE A REPLY