عالمی شہرت یافتہ پاکستانی کوہ پیما محمد علی سدپارہ دنیا کی بلند ترین چوٹی کو موسم سرما میں سر کرنے ماؤنٹ ایورسٹ بیس کیمپ پہنچ گئے ہیں۔محمد علی سدپارہ دنیا کی بلند ترین چوٹی کو سرما میں بغیر آکسیجن سر کر کے عالمی ریکارڈ بنانا چا ہتے ہیں۔

ماؤنٹ ایورسٹ کو موسم سرما کےد وران پہلی بار 1980میں سر کیا گیا تھا اور تب سے اب تک سر توڑکوششوں کے باوجود موسم سرما میں دوبارہ سر نہیں کیا جا سکا۔

دنیا کی مشکل ترین چوٹی نانگا پربت کو موسم سرما کے دوران سر کر کے عالمی ریکارڈ بنانے والے محمد علی سدپارہ نے ماونٹ ایورسٹ نیپال سے جیو نیو ز کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ ماونٹ ایورسٹ میں گزشتہ دو روز سے موسم خوشگوار ہے اور وہ ا پنے ہسپانوی کو ہ پیما ایلکس کے ساتھ موسم سے مانوس ہونے کے لئے ماونٹ ایورسٹ کی مہم جوئی سے قبل قریب واقع 7200 بلند گروسچیک پیک سر کریں گے۔

SHARE

LEAVE A REPLY