تیونس میں بچتی اقدامات اور قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے حکومت مخالف مظاہروں کا سلسلہ بدستور تیسرے دن بھی جاری رہا۔ ملکی وزارت داخلہ نے بتایا ہے کہ پرتشدد کارروائیوں کو روکنے کی خاطر دو سو افراد کو گرفتار کیا جا چکا ہے جبکہ پچاس سکیورٹی اہلکار زخمی بھی ہوئے ہیں۔

مقامی میڈیا کے مطابق ملک کے دارالحکومت کے علاوہ بیس دیگر شہروں میں بھی مظاہرے جاری ہیں۔ مظاہرین کا کہنا ہے کہ حکومت کے بچتی اقدامات کے خاتمے تک مظاہروں کا سلسلہ جاری رہے گا۔

SHARE

LEAVE A REPLY