ایران کی جوہری تنظیم کے ترجمان کا کہنا ہے کہ امریکا عالمی جوہری معاہدے سے پیچھے ہٹا تویورینیم کی افزودگی دوبارہ سے شروع کر سکتے ہیں۔

تہران کے مقامی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے ترجمان بہروز کملوندی کا کہنا تھا کہ امریکا کی جانب سے جوہری معاہدے سے انکار کی صورت میں ایران صرف دو دنوں میں یورینیم کی افزودگی میں بیس فیصد تک اضافہ کرسکتا ہے۔

ایران نے معاہدے کے تحت پرامن مقاصد اور ایران پر عائد عالمی پابندیوں کے خاتمے کے لیے یورینیمکی افزودگی روکی، امریکا کے کہنے پر ایرانی جوہری معاہدے پر دوبارہ بات نہیں ہوگی۔

معاہدے پر دستخط کرنے والے یورپی ممالک، روس اور چین معاہدے کو قائم رکھنے کے ذمہ دار ہیں۔

SHARE

LEAVE A REPLY