امریکی دارالحکومت واشنگٹن ڈی سی میں وائٹ ہاؤس کے سامنے امریکہ کی مختلف ریاستوں سے آئے پشتونوں نے ٕ مظاہرہ کیا ۔ یہ مظاہرہ پاکستان میں پشتونوں کے حقوق کے لیے سرگرم تحریک پشتون تحفظ موومنٹ کےساتھ اظہار یکجہتی کے لیے کیا گیا تھا ۔

مظاہرے میں شریک لوگوں کا کہنا تھا کہ وہ پشتون تحفظ موومنٹ کے مطالبات کی حمایت کرتے ہیں اور ان کی کوششوں میں ان کے ساتھ ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ ان کے احتجاج کا مقصد پشتونوں کے لئے بنیادی سماجی اور سیاسی حقوق کا حصول ہے۔

مظاہرے کے منتظم مجیب الرحمان نے وائس آف امریکہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان کے مطالبات وہی ہیں جو پشتون تحفظ موومنٹ کے ہیں ۔’’لیکن آج یہاں وائٹ ہاؤس کے سامنے اکھٹے ہونے کا مقصد یہ ہے کہ امریکی حکومت پاکستانی حکومت پر سفارتی دباوؤ ڈالے کہ وہ پشتونوں کے ساتھ ہونے والی نا انصافی بند کرے اور ان کے مطالبات پورے کئے جائیں ۔ کیونکہ پاکستان دہشت گردی کے خلاف جنگ میں امریکہ کا قریبی اتحادی ہے‘‘۔

پشتون تحفظ موومنٹ کے حق میں جمعہ کے روز جرمنی کے شہر فرینکفرٹ میں بھی پاکستانی قونصل خانے کے سامنے بڑی تعداد میں پشتونوں نے مظاہرہ کیا ۔

اس کے علاوہ امریکی ریاست کیلی فورنیا میں بھی پاکستانی قونصل خانے کے سامنے احتجاج کیا گیا ۔

منتظمین کا کہنا ہے کہ اگر پاکستان میں پشتون تحفظ موومنٹ کے مطالبات پورے نہ کیے گئے تو وہ آئندہ امریکہ کے ایسے دیگر بڑے شہروں میں بھی ریلی نکالنے کا ارادہ رکھتے ہیں جہاں پشتون آباد ہیں ۔ کیونکہ پاکستان میں پشتون لوگوں کے مطالبات قانونی ہیں اور غیر آئینی نہیں ۔ ان مسائل کے حل سے ان کی زندگی میں آسانیاں پیدا ہوں گی ۔

SHARE

LEAVE A REPLY