ایک امریکی سفارت کار کی گاڑی کی ٹکر سے ہلاک ہونے والے ایک نوجوان کے اہل خانہ اور دیگر افراد نے جمعے کو اسلام آباد میں ایک احتجاجی مظاہرہ کیا۔

مظاہرے میں شریک افراد نے اس واقعہ کی مذمت کرتے ہوئے حکومت سے ہلاک ہونے والے 22 سالہ نوجوان عتیق کے خاندان کو انصاف فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

یہ احتجاجی مظاہرہ مارگلہ روڈ پر اس جگہ ہوا جہاں گزشتہ ہفتے ایک گاڑی کی ٹکر سے موٹر سائیکل پر سوار عیتق بیگ ہلاک اور ان کا ساتھی راحیل شدید زخمی ہو گیا تھا۔

پولیس کے مطابق اس گاڑی کو اسلام آباد میں تعینات امریکی سفارت کار کرنل جوزف امیونئیل چلا رہے تھے۔

احتجاجی مظاہر ے میں درجنوں افراد شریک تھے اور ان میں عتیق کے چچا مہربان خان بھی شامل تھے۔

وائس آف امریکہ سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی سے اس معاملے کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ ” یہ کوئی معمولی واقعہ نہیں ہے اور وہ (وزیر اعظم ) وزارت خارجہ سے کہیں کہ وہ(امریکی ) سفارت خاے سے رابطہ قائم کر کے ہمیں انصاف فراہم کریں اور حکومت کو چاہیے کہ وہ عتیق کے اہل خانہ کو مناسب معاوضہ ادا کرنے کا بھی انتظام کرے۔ “

SHARE

LEAVE A REPLY