معاشیات کا نوبیل انعام اولیور ہارٹ اور بینگٹ ہومسٹورم کو

0
353

برطانوی نژاد اولیور ہارٹ اور فن لینڈ کے بینگٹ ہومسٹورم کو معاہدوں سے متعلق ان کے نظریے پر معاشیات کے شعبے میں نوبیل انعام سے نواز دیا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی ’رائٹرز‘ کے مطابق اولیور ہارٹ اور بینگٹ ہومسٹورم کے ’نظریہ کنٹریکٹ‘ میں مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے ایگزیکٹیوز کو ریوارڈ دیئے جانے کے بہترین طریقوں سے متعلق مختلف سوالات کے جواب دیئے گئے ہیں۔

مثال کے طور پر کہ مینیجرز کو پیڈ بونَسز دیئے جانے چاہیے یا انہیں اسٹاک دیئے جانے کا آپشن دیا جائے، اسی طرح ٹیچرز یا شعبہ صحت کے ورکرز کو فکدص ریٹس کے حساب سے ادائیگی کی جانی چاہیے یا کارکردگی کی بنیاد پر ادائیگی کا معیار مقرر کیا جانا چاہیے۔

نوبیل پرائز کمیٹی کے رکن اور اسٹاک ہوم اسکول آف اکنامکس کے پروفیسر پیر اسٹرومبرگ کا کہنا تھا کہ یہ نظریہ ناصرف معاشیات بلکہ دیگر سماجی علوم کے لیے بھی ناقابل یقین حد تک اہم ہے۔

رائل سویڈش اکیڈمی آف سائنسز کی جانب سے دونوں پروفیسرز کے لیے 9 لاکھ 28 ہزار ڈالر کے انعام کے اعلان کے ساتھ کہا گیا کہ ان کے نظریے میں سامنے آنے والے نتائج کے کارپوریٹ گورننس، دیوالیہ پن سے متعلق قانون سازی اور سیاسی قوانین پر اثرات مرتب ہوں گے۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ دونوں پروفیسرز کے کام سے مختلف شعبوں میں ایگزیکٹیوز سے معاہدوں کے ڈیزائن میں ممکنہ خطرات کی نشاندہی کی جاسکتی ہے۔

اولیور ہارٹ اس وقت امریکا کی ہارورڈ یونیورسٹی میں معاشیات کے پروفیسر ہیں جبکہ بینگٹ ہومسٹورم میساچیوسٹس انسٹیوٹ آف ٹیکنالوجی میں معاشیات اور مینیجمنٹ کے پروفیسر کے طور پر فرائض انجام دے رہے ہیں۔

رواں سال میڈیسن، فزکس، کیمسٹری اور معاشیات کے شعبوں میں جن 9 شخصیات کو نوبیل انعامات سے نوازا گیا، ان میں سے 5 کا تعلق برطانیہ، ایک کا فرانس، ایک کا فن لینڈ، ایک کا ہالینڈ اور ایک کا جاپان سے تعلق ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY