شعیب اختر نے کہا ہے کہ 1996ء میں میچ فکسنگ عروج پر تھی،

0
655

پاکستان کے سابق فاسٹ بولر اور راولپنڈی ایکسپریس شعیب اختر نے کہا ہے کہ 1996ء میں میچ فکسنگ عروج پر تھی، ڈریسنگ روم کا ماحول بہت خراب تھا، جاوید میانداد اور شاہد آفریدی کا معاملہ عدالت میں جاتا تو گڑےمردے اکھڑ جاتے۔

شعیب اختر نے نے کسی کا نام نہیں لیا لیکن اشاروں کنایوں میں بہت کچھ کہہ گئے، جیونیوز کے پروگرام ’جیو پاکستان ‘میں گفتگو کرتے ہوئے شعیب اختر نے کئی انکشافات کیے۔

راولپنڈی ایکسپریس کہتے ہیں کہ میانداد آفریدی تنازع کا عدالت میں نہ جانا ہی اچھا تھا ،ورنہ بہت سے پردہ نشینیوں کے نام سامنے آجاتے۔ انہوں نے کہا کہ کھیلنے کے ساتھ ساتھ کھلاڑی کو بولنا بھی آنا چاہئے۔

سابق فاسٹ بولر نے بتایا کہ انہوں نے محمد عامر کوبھی بری صحبت سے دور رہنے کی تلقین کی تھی۔

SHARE

LEAVE A REPLY