نقیب اللہ قتل کیس میں عدالت نے جیل میں ملزم راؤ انوار کو بی کلاس دینے کی درخواست منظور کرلی۔ عدالت کا کہنا تھا کہ سب جیل کے حوالے سے سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کا انتظار ہے، فیصلہ آتے ہی عدالت اپنا فیصلہ سنائے گی۔

انسداد دہشت گردی کی عدالت میں ملزم راؤ انوار کے گھر کو سب جیل قرار دینے سے متعلق درخواست کی سماعت ہوئی۔ عدالت میں ملزم راؤ انوار کی جانب سے جیل میں بی کلاس دینے کیلئے درخواست دائر کی گئی جسے عدالت نے منظور کرلیا۔ عدالت میں کیس کے تفتیشی افسر ایس ایس پی سینٹرل ڈاکٹر رضوان بھی پیش ہوئے، جبکہ ملزم رائو انوار کو بھی پیش کیا گیا، عدالت کا کہنا تھا کہ رائو انوار کے گھر کو سب جیل بنانے سے متعلق درخواست کا فیصلہ سندھ ہائی کورٹ نے محفوظ کیا ہوا ہے، سندھ ہائی کورٹ کے فیصلے کا انتظار کیا جائے، عدالت کا فیصلہ آنے کے ہی عدالت اپنا فیصلہ سنائے گی۔ عدالت نے جیل میں راؤ انوار کو بی کلاس دینے کی درخواست منظور کرتے ہوئے سماعت 41 جون تک کیلئے ملتوی کر دی۔

واضح رہے کہ ملزم راؤ انوار کے گھر کو سب جیل قرار دینے کیخلاف نقیب اللہ محسود کے والد خان محمد کی جانب سے درخواست دائر کی گئی تھی کہ راؤ انوار قاتل ہے، اسے جیل منتقل کیا جائے، رائو انوار کو سب جیل قرار دینا غیر قانونی ہے۔ محکمہ داخلہ کی جانب سے نوٹیفکیشن بھی جاری نہیں کیا گیا تھا۔ سندھ ہائی کورٹ نے راؤ انوار کے گھر کو سب جیل قرار دینے سے متعلق فیصلہ محفوظ کیا ہوا ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY