سپریم کورٹ نے خدیجہ صدیقی حملہ کیس سے متعلق اپیل سماعت کے لیے باضابطہ طور پرمنظور کرتے ہوئے ملزم شاہ حسین کو ایک لاکھ کے مچلکے جمع کروانے کی ہدایت کر دی۔

سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے خدیجہ صدیقی کی اپیل پر سماعت کی اور کیس گرمیوں کی عدالتی تعطیل کے بعد سماعت کے لیے مقرر کر دیا ۔

دوران سماعت جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیئے کہ کیا وجہ تھی کہ خدیجہ صدیقی اور اس کی چھوٹی بہن نے پوری دنیا چھوڑ کر ملزم شاہ حسین پر الزام لگایا؟

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ملزم کے وکیل سے استفسار کیا کہ کیا یہ دونوں قانون کے طالبعلم ہیں ؟اس واقعہ کے بعد دونوں نے قانون سے متعلق کافی کچھ سیکھ لیا ہوگا۔

دوران سماعت جسٹس آصف سعید نے ریمارکس دیئے کہ واقعہ دن کے وقت ہوا رات ہوتی تو شک کی گنجائش باقی تھی۔

SHARE

LEAVE A REPLY