ایران کے صدر اور فرانسیسی ہم منصب ایمانوعیل میکرون کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ ہواہے،حسن روحانی کا کہناہے کہ یورپی معاشی پیکج امریکی پابندیوں کا اثر کم کرنے کیلئے ناکافی ہے۔

غیرملکی خبر رساں ایجسنی کے مطابق ایران کےصدر حسن روحانی یورپ کے دورے کے دوسرے مرحلے میں آسٹریا میں موجود ہیں۔اس دوران فرانسیسی صدر ایمانوعیل میکرون سے ٹیلیفونک رابط ہواہے۔حسن روحانی نے واضح کردیا کہ یورپی معاشی پیکج ایران پر امریکی پابندیوں کا اثر ختم کرنے کیلئے کافی نہیں۔امید ہے کہ یورپی وزراء کے اجلاس کے دوران ایران کو مناسب معاشی پیکج دیاجایےگا۔بصورت دیگر ایران معاہدے سے علیحدہ ہوجائےگا۔امریکا کی 2015ایران اور 6عالمی طاقتوں کے درمیان ایٹمی معاہدے سے علیحدگی کے بعد ایران پر دوبارہ اقتصادی پابندیاں لگ گئی ہیں۔ اور عالمی ادارے اور کمپنیاں تہران سے نکل رہی ہیں۔لیکن روس، چین، فرانس، جرمنی، برطانیہ اور دیگر ممالک نے کہاہے کہ وہ ایران کے ساتھ ایٹمی معاہدے پر عمل درامد جاری رکھیں گےاور تہران معاہدے پر عمل درآمد نہ روکے۔

ایران کہہ چکاہے کہ اس کے مفادات کا تحفظ نہ ہوا تووہ6 عالمی طاقتوں کے ساتھ کئے گئے معاہدے سے دستبردار ہوجائےگا۔

SHARE

LEAVE A REPLY