الیکشن کمیشن آف پاکستان نے مسلم لیگ ن کی رجسٹریشن کو منسوخ کرنے کی درخواست پر سماعت 15 اگست تک ملتوی کر دی۔

الیکشن کمیشن میں ن لیگ کی رجسٹریشن منسوخ کرنے اور پارٹی سے نواز کا نام ختم کرنے کی 4 درخواستیں دائرہیں۔

مسلم لیگ ن کے وکیل اظہر جدون الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے جبکہ درخواست گزار خرم نواز گنڈا پور اور وکیل نیاز انقلابی بھی الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے۔

الیکشن کمیشن کے ممبر برائے پنجاب الطاف ابراہیم کا کہنا ہے کہ اس موقع پرپارٹی کا نام ختم نہیں کر سکتے، اس سے نیا پنڈورا باکس کھل سکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ الیکشن میں 14 دن رہ گئے ہیں، کافی بیلیٹ پیپرز چھپ چکے ہیں، الیکشن ہونے تک اس حوالےسے کوئی فیصلہ نہیں کریں گے،آپ کا مؤقف الیکشن کے بعد سنیں گے۔

وکیل نیازانقلابی کا کہنا تھا کہ یہ انٹرنیشنل کریمنل ہے، اس کے نام سے پارٹی نہیں چل سکتی۔

مسلم لیگ ن کی جانب سے اس سلسلے میں الیکشن کمیشن میں جواب جمع نہ کرایا جاسکا۔

ممبر پنجاب نے درخواست گزاروں سے استفسار کیا کہ آپ چاہتے کیا ہیں؟جس پر درخواست گزار نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ مسلم لیگ ن میں سے ن ہٹایا جائے۔

الیکشن کمیشن نے درخواستوں پر سماعت 15 اگست تک ملتوی کر دی گئی

SHARE

LEAVE A REPLY