سپریم کورٹ نے پنجاب کمپنیزاسکینڈل نیب کو بھجوا تے ہوئے 10 دن میں رپورٹ طلب کر لی۔

سپریم کورٹ میں پنجاب کمپنیزاسکینڈل کیس کیسماعت چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار کی سر براہی میں ہوئی۔

عدالت میں چیف سیکرٹری پنجاب،ڈی جی نیب لاہور اور تمام کمپنیوں کے سی ای اوز پیش ہوئے۔

چیف جسٹس پاکستان نے میاں ثاقب نثار نے عدالت میں ریمارکس دیئے کہ پنجاب کمپنیزاسکینڈل پر ریفرنس بنتا ہے تو نیب ریفرنس بھی فائل کرے۔

انہوں نے حکم دیا کہ 3 لاکھ سے زائد سیلری والے تمام افسران نیب کے روبرو پیش ہوں،اگر کوئی پیسے واپس نہیں کرے گا تو ہم نکلوا لیں گے۔

چیف جسٹس پاکستان نےآئی ڈیم کے سی ای او پر سخت اظہار برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آپ 11 لاکھ روپے تنخواہ لے رہے ہیں، آپکا کیا تجربہ ہے،کسی کو خیال ہی نہیں کہ یہ عوام کے ٹیکس کا پیسہ ہے،اورنج لائن ٹرین،فاسٹ ٹریک اوردیگرمنصوبےایک ہی ٹھیکیدارکودیےگئے۔

SHARE

LEAVE A REPLY