ترک صدر رجب طیب ایردوآن نے کہا ہے کہ سزائے موت کو جلد ہی بحال کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے منگل کے دن ہوئے ایک بم دھماکے میں ہلاک ہونے والی ایک خاتون اور اس کے نومولود بچے کی آخری رسومات میں شرکت کی اور اس موقع پر انہوں نے کہا کہ وہ سزائے موت کی بحالی کے حوالے سے جلد فیصلہ کر لیں گے۔ ترکی میں سن 1984 کے بعد ابھی تک کسی مجرم کی سزائے موت پر عملدرآمد نہیں کیا گیا ہے۔ یورپی یونین میں شمولیت کی شرائط کے تحت ترکی نے سن دو ہزار چار میں سزائے موت کو ختم کر دیا تھا۔

SHARE

LEAVE A REPLY