مرکزاطلاعات فلسطین
اسرائیلی عدالت کی طرف سے مشروط طور پر رہائی کا حکم دیے جانے کے بعد دو فلسطینی نوجوانوں عطیہ محمد غزاوی ایک دوسرے اسیر کی مشروط طور پررہائی کا حکم دیا ہے۔

مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق 18 سالہ اسیر عطیہ محمد غزاوی کا تعلق بیت المقدس کے سلوان قصبے کی الثوری کالونی سے ہے اور اسے 16 ماہ قبل حراست میں لیا گیا تھا جب اس کی عمر 17 سال سے کم تھی۔

فلسطینی اسیران کے اہل خانہ پرمشتمل کمیٹی کی طرف سے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ الغزاوی کو اسرائیلی فوج نے 21 جولائی 2015ء کو حراست میں لیا تھا۔ اس پر یہودی فوجیوں اور آباد کاروں سنگ باری کا الزام عاید کیا گیا اور اسی الزام میں اسے سولہ ماہ قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

ادھر بیت المقدس میں اسرائیل کی ایک مجسٹریٹ عدالت نے باب الحطہ کالونی سے تعلق رکھنے والے دو فلسطینی نوجوانوں کو آج جمعرات کی شام تک پولیس کی حراست میں رکھنے کا حکم دیا ہے جب کہ دو نوجوانوں کی مشروط رہائی کا حکم دیا گیا ہے۔

مجسٹریٹ عدالت نے زیرحراست فلسطینی لڑکوں ناصر ، منیر العجلونی، راغب ابو اسنیہ کو جمعرات کی شام تک پولیس کی تحویل میں رکھنے جب کہ مجد شریفہ اور مومن حشیم کو رہا کرنے کے ساتھ ساتھ انہیں حکم دیا گیا ہے کہ وہ ایک ماہ تک ایک دوسرے سے نہیں ملیں گے۔

SHARE

LEAVE A REPLY