وزیر داخلہ چودھری نثار نے کہا کہ خانانی اور کالیا کے ذریعے پاکستان سے بڑ ے پیمانے پر منی لانڈرنگ ہوئی، گزشتہ حکومت کے اہلکار بھی شامل تھے ،آئندہ دو ہفتوں میں حقائق سے پردہ اٹھاؤں گا۔امریکا میں الطاف کالیا کے پکڑے جانے پر یہاں ایف آئی اے کو جھنجھوڑا،میں نےخاموشی سےانکوائری کرائی تو تشویشناک صورتحال سامنے آئی۔

اسلام آباد میں ریپڈ رسپانس فورس کے پہلے بیچ کی پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب کے بعدپریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ پی پی کاکرپشن مخالف مہم چلاناایسےہےجیسے بی جے پی مسلمانوں کےحقوق کے لیے مہم چلائے،بلاول بھٹو کی والدہ کا نام بھی پاناما لیکس میں ہے ۔

چودھری نثار نے کہا کہ سانحہ بلدیہ ٹاؤن فیکٹری میں پیسے کی خاطر لوگوں کو زندہ جلایا گیا، کریڈٹ دیں ہم سفاک قاتل کو بینکاک سے اٹھا کر لائے،تھائی لینڈ کے وزیر داخلہ کو خط لکھ رہا ہوں ۔

وفاقی وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ بچے کی اوپ پٹانگ باتوں کا جواب نہ مانگا جائے ، ان کے کان میں کسی نے کہہ دیا ہے کہ عمران خان اسٹائل اپنانے سے کشتی پار لگ جائے گی ۔انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو کو مونث مذکر کا معلوم نہیں ۔

انہوں نے سندھ حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ سندھ میں اے ڈی خواجہ جیسے ایماندار آئی جی کا برا حال کیا گیا، جبری رخصت پر بھیجنا افسوسناک عمل ہے ۔

چودھری نثار نے مزید نے کہا کہ تین ہفتے زور لگانے کے بعد پارلیمنٹ کا مشترکہ سیشن ہوا ،کابینہ میں مطالبہ کروں گا کہ ایبٹ آباد کمیشن کی رپورٹ پبلک کی جائے

SHARE

LEAVE A REPLY