امریکا کے الیکٹورل کالج نے ڈونلڈ ٹرمپ کے صدر منتخب ہونے کے حوالے سے باضابطہ اعلان کردیا ہے۔

ڈونلڈٹرمپ نے 50 میں سے 31 ریاستوں میں الیکٹورل کالج کے305 ووٹ حاصل کیے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق امریکی میڈیا کا کہنا ہے کہ اس اعلان کے بعد ٹرمپ کی 20 جنوری کو صدر کی حیثیت سے تقرری کی تصدیق ہوگئی ہے جنھوں نے 6 ہفتے قبل ڈیموکریٹک کی اُمیدوار ہیلری کلنٹن کو شکست دی تھی۔

امریکی انتخابات کے نائب صدر مائیک نے اپنے ٹوئٹ میں کہا کہ ‘ڈونلڈ ٹرمپ کو مبارک ہو،انھیں الیکٹورل کالج نے آج باضابطہ طور پر امریکا کا صدر منتخب کرلیا ہے’۔

خیال رہے کہ عام حالات میں الیکٹورل کالج کے ووٹ کو ربڑ سٹیمپ کے طور پر دیکھا جاتا ہے جس میں منتخب کرنے والے ملک بھر میں باضابطہ ووٹ ڈالتے ہیں تاہم حالیہ تناظر میں جب ہیلری کلنٹن سمیت دیگر کی جانب سے انتخابات کو متنازع بنانے کی کوشش کی جارہی تھی مذکورہ اعلان بہت اہمیت کا حامل تصور کیا جارہا ہے۔

گذشتہ ہفتے امریکا کی سینٹرل انٹیلی جنس ایجنسی (سی آئی اے) اس نتیجے پر پہنچی تھی کہ 2016 کے صدارتی انتخابات میں روس کی مداخلت نہ صرف امریکی انتخابی نظام کے اعتماد میں کمزوری کی وجہ بنی ساتھ ہی ڈونلڈ ٹرمپ کی برتری اور وائٹ ہاؤس تک رسائی بھی اسی مداخلت کا نتیجہ ہے۔

SHARE

LEAVE A REPLY