جمعہ، تئیس دسمبر کو روسی صدر ولادیمیر پوٹن نے رواں برس کی اختتامی پریس کانفرنس میں ملکی اور عالمی امور پر اظہار خیال کیا۔ اس پریس کانفرنس میں انہوں نے امریکی صدارتی الیکشن میں ہیکنگ کے معاملے سے لے کر شامی تنازعے کے مستقبل تک مختلف موضوعات پر گفتگو کی۔

انہوں نے کریمیا کے جبری الحاق کے بعد امریکی و یورپی یونین کی پابندیوں کے بعد روسی اقتصادی صورت حال کے بارے میں کہا کہ اس میں مثبت تبدیلی اور بہتری کی صورت حال پیدا ہونا شروع ہو گئی ہے۔ پوٹن نے ملک میں افراطِ زر میں اگلے برس کمی کا امکان ظاہر کیا۔ انہوں بتایا کہ روس کے غیرملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافہ ہوا ہے۔ روسی صدر نے اسلحے کی دوڑ میں شریک ہونے کو خارج از امکان قرار دیا۔

SHARE

LEAVE A REPLY